صفحہ اول / بھارت / یہ ہے ہندوستان (جہاں موٹر سائیکل ٹیکسی کو لائسنس دے جاتے ہیں) -قسط اول

یہ ہے ہندوستان (جہاں موٹر سائیکل ٹیکسی کو لائسنس دے جاتے ہیں) -قسط اول

جہاں موٹر سائیکل ٹیکسی کو لائسنس دے جاتے ہیں – گوا کی دلچسپ باتیں

ریاست گوا بھارت کی سب سے چھوٹی مگرفی کس آمدنی کے لحاظ سے سب سے امیر ریاست ہے، یہاں کے لوگ دو قومیت اور دو پاسپورٹ رکھ سکتے ہیں پرتگالی اور بھارتی- تیس فیصد رقبے پر جنگلات ہیں ویسے تو بھارت کی چھیاسی فیصد آبادی یقین رکھتی ہے کہ تمام سیاسی جماعتیں کرپٹ ہیں مگر گوا کے چیف منسٹرمنوہرIIT سے پڑھکر کسی صوبے کے چیف منسٹر بننے والے پہلے وزیر اعظم نے بہت نیک نامی کمائی، وعدے کے مطابق پٹرول پر ٹیکس ختم کر کے اسے پندرہ روپے لیٹر کیا، یہ بھارت کی واحد ریاست ہے جہاں پٹرول ڈیزل سے بھی سستا ملتا ہے – گوا میں کوئی لڑکی جیسے ہی اٹھارہ سال کی عمر کو پہنچتی ہے تو سرکاری کی طرف سے اسکے اکاونٹ میں ایک لاکھ روپے ٹرانسفر ہو ہو جاتے ہیں-

Posted by Sohail Balkhi on Friday, January 26, 2018


سیاحت اور شراب کو کباب کے لیے دنیا میں مشھور، صاف ستھری قدرتی ساحلی علاقوں، شراب خانوں اور ناج گانا ہی اسکی اصل معیشت ہے – ایشیا کا پہلا پرنٹنگ پریس سن ١٩٥٦ میں یہاں ہی لگایا گیا- ایشیا کی پہلی نیول میوزیم یہاں ہی بنائی گئی، پہلا میڈیکل کالج یہاں بنا جو کچھ عرصے قبل ڈھا دیا گیا- پہلا انگلش میڈم اسکول یھاں کھلا—–جب آپ گوا کے بارے میں پڑھیں گے تو بہت دلچسپ اور تاریخی باتیں یہاں کے بارے میں آپکو جاننے کو ملیں گی – مجھے یہاں کی ” دو پہیہ والی ٹیکسی ” والی بات دلچسپ لگی – 

goa people
گوا بھارت کی واحد ریاست ہے جہاں ” ٹو وہیلر” ٹیکسی کو لائسنس جاری کیے جاتے ہیں – موٹر سائیکلوں والی ٹیکسی کے ان رائیڈر کو عام طور پر ” پائلٹ ” کہا جاتا ہے – آپ کہیں کھڑے ہونگے تو ایک پائلٹ آکر آپکے پاس رک جائے گا، بس بیٹھ جائیں اور اترتے ہوئے کچھ پیسے فاصلے کی مناسبت سے دیدیں – یہ ایک انتہائی سستی سواری ہے جو گوا کے لوگوں کے لیے پبلک ٹرانسپورٹ کا کام دیتی ہے- لوکل لوگ اپنی موٹر سائیکل خود چلاتے ہیں لیکن اپ سیاح ہیں تو آپکو یہ ٹیکسی ہی استمال کرنی ہوگی (جاری ہے )

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے