صفحہ اول / تعلیم / پیما کے بانی رکن اور پشاور میڈیکل کالج کے ایگزیکٹو ڈایریکٹر ڈاکٹرسید افتخارحسین

پیما کے بانی رکن اور پشاور میڈیکل کالج کے ایگزیکٹو ڈایریکٹر ڈاکٹرسید افتخارحسین

پیما کے بانی رکن اور پشاور میڈیکل کالج کے ایگزیکٹو ڈایریکٹر ڈاکٹرسید افتخارحسین نے بتایا کی پی ایم سی میں لڑکیاں کلاس رومز میں پیچھے اور لڑکے آگے بیٹھتے ہیں ….ڈین ہوں یا وائس ڈین یا کوئ اور استاد سب کے کمروں کے دروازے ہمیشہ کھلے رہتے ہیں….تین بجے کے بعد لائیبریری کا لیڈیز عملہ ہوتا ہے اور صرف لڑکیوں کے لیئے مختص ہوتا ہے,لائبریری 24 گھنٹے اوپن رہتی ہے ..لڑکوں کے لیے دوسری عمارت میں ہوسٹل اور وہاں کی لائبریری بھی 24 گھنٹے اوپن –

ہمارے ہاں ریسرچ ہوتی ہے تو ہم نے ایک انیمل سینٹر بھی بنایا ہے اور وہ دیکھانے لے گئے …ائیر کنڈیشنڈ انیمل سینٹر میں گنی پگ اور خرگوش دیکھے .یہ جانور ان سے دوسرے میڈیکل کالج والے بھی خرید کر لے جاتے ہیں
ہم کالج کے مختلف شعبہ جات بھی دیکھنے گئے ,ڈاکٹر حفیظ الرحمان اور ڈاکٹر نجیب سے بھی ملاقات ہوئ .
پہلے میں سوچتا تھا کہ سیاسی پارٹی کے لوگ کوئ ادارہ کبھی نہیں چلا سکتے مگر پشاور میڈیکل کالج بنانے اور چلانے والے پیماکے ان غیر معمولی صلاحیت ,ہمت اور جذبہ رکھنے والے ان سئینیر ڈاکٹرز نے میری رائے آج بدل دی ….اب رائے یہ ہے کہ جوادارہ بھی پروفیشنلی ,پروفیشنلز کے زیراھتمام میرٹ پر چلایا جائے اسکا مستقبل پشاور میڈیکل کالج کی طرح روشن ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے