صفحہ اول / تعلیم / ای-لرننگ کا دور شروع ہو چکا اب مستقبل میں تعلیمی ادارے آنا ضروری نہیں

ای-لرننگ کا دور شروع ہو چکا اب مستقبل میں تعلیمی ادارے آنا ضروری نہیں

آپ گورنمنٹ کالج اور اسکول کے پرنسپل اور ٹیچر ہیں، بچوں کو ای میل پر اسائنمنٹ جمع کرانے پر پابند کر سکتے ہیں؟ مختلف کلاسز اور دلچسپیوں کی بنیاد پر فیس بک گروپ، فورم ،نیوز گروپس استعمال کرسکتے ہیں. مختلف موضوعات پر نیوز گروپ ، فورم سبسکرائب کر سکتے ہیں. ہمارے ٹیچرز کے لیکچرز کی ویڈیوز بھی موجود ہوں یوٹیوب پر – اساتذہ ای-لرننگ کے مواقع سے فائدہ اٹھا کر اپنی تعلیمی استعداد بڑھا سکتے ہیں- موبائل اور انٹرنیٹ صرف کھیل تماشے کے لیے نہیں ہے —

elearning-program

یہ بات کہی گئی سندھ حکومت کے ایک تعلیمی سیمینار میں جہاں مقررین نے تفصیل سے اس بات پر روشنی ڈالی کہ جدید ٹیکنالوجی کی بدولت اب لوگوں کے پاس یہ آپشن ہے کہ اپنی رفتار سے ، اپنی مرضی کے ٹیچر یا مرضی کی ویب سائٹ یا کالج یونیورسٹی کا انتخاب کرکے پڑھائی کریں جہاں انہیں کار پارک کرنے ، حاضری لگانے اور دیگر لوازمات کے بغیر صرف پڑھائی کرنی ہو گی

ای لرننگ کے فوائد اور نقصانات پر روشنی ڈالتے ہوئے مقررین نے بتایا میڈیم کچھ بھی ہو سکتا ہے ، اسکائپ ہو کہ ویڈیو کلنگ یا یو ٹیوب مگر یہ سلسلہ مختصر کورسز اور ایڈوانس لیول کی تعلیم کے لئیے زیادہ سود مند ہوگا ،ابتدائی جماعتوں میں سوشل اسکلز سیکھنے کے لیے  اسکولوں کا رخ کرنا ہی راستہ ہے .

e learning seminar

 

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے