صفحہ اول / کالمز / انفارمیشن ٹیکنیالوجی میں روزبہ روز بڑھتی ہوئی تیزی

انفارمیشن ٹیکنیالوجی میں روزبہ روز بڑھتی ہوئی تیزی

انفارمیشن ٹیکنیالوجی میں روزبہ روز بڑھتی ہوئی تیزی

انفارمیشن ٹیکنیالوجی میں بہت تیزی سے تبدیلیاں آتی ہیں, کچھ کا کہنا ہے کہ ہر دو سال میں اسکا علم دگنا ہوجاتا ہے ..آپ سب کچھ فوری ریفریش یا اپ گریڈ نہیں کر سکتے ……فوکسڈ لوگ اپنے اپنے شعبے میں اپ ڈیٹس اور ریویزنز سے باخبر رہتے ہیں ,پڑھتے رہتے ہیں اور اسکے مطابق اپنے سسٹم کو اپ ڈیٹ رکھتے ہیں….


کسی سیٹھ ,مالک یا مالکان کے لییے ممکن نہیں کہ وہ جانچ سکے کہ اسکی آئ ٹی ٹیم لولی لنگڑی ہے یا صحت مند اور اپ ٹو ڈیٹ اور وہ اندھیرے میں ہی رہتے ہیں – اسکا حل ہے کہ تھرڈ پارٹی آئ ٹی آڈیٹنگ کمپنی سے اپنے افراد ,سسٹم اور پروسیجر کا آڈٹ کرایئں… سائز کے لحاظ سے دیکھیں کہ واقعی بڑی آئ ٹی آڈٹ کمپنی کی خدمات ایفورڈ کر سکتے ہیں یا کوئ ایک سئینئیر آئ ٹی پروفیشنل بھی کافی رہے گا …جو آکر آپکے لوگوں سے بات چیت کرکے دیکھے کہ وہ اپنی نالج کو اپ ڈیٹ رکھے ہوئے ہیں کہ دفتری اوقات میں صرف فیس بک پر وقت برباد کر کے تنخواہیں لے رہے ہیں…بیک اپ کہاں اور کس حالت میں ہے ؟ کبھی بیک اپ ریسٹور کر کےٹیسٹ کیا گیا ؟کس نے تصدیق کی ؟ اگر موجودہ عمارت جہاں سسٹم ہے آگ لگ جانے یا کسی حادثے کی صورت میں تباہ ہوجانے پر کسی اور دور دراز مقام یا شہر میں بیک اپ کی کاپی ہے کہ کوئ وہاں جاکر سسٹم اور بزنس وہاں سے اسٹارٹ کرسکے ؟


نائن الیون میں 100 کے قریب ایسے بزنس دنیا سے مکمل ختم ہوگئے جنہوں نے ورلڈ ٹریڈ ٹاور کے ایک ٹاور کے آفس کا بیک اپ دوسرے ٹاور کے آفس میں رکھا تھا اور وہ تمام بزنس جنہوں نے بیک اپ کسی اور شہر کے کسی بنک لاکر میں رکھے تھے وہ اگلے ہی دن سے دوبارہ بزنس میں تھے – ہر اچھے ادارے کا ایک "ڈیزاسٹر ریکوری پلان” DRP ہوتا ہے جس میں پروسیجر اتنے واضح لکھے ہوتے ہیں کہ کوئ عام آدمی بھی فالو کرکے سسٹم کو کم سے کم وقت میں رواں دواں کردے – کیا آپ نے کبھی اپنے چھوٹے یا درمیانے بزنس کا کوئ ڈی آر پی پلان بنایا ؟کبھی آئ ٹی مینیجر کا ٹیکنیکل ریویو یا انٹرویو کسی ایکسپرٹ سے کروایا ؟ اندھیروں سے نکل کر روشنی میں آیئں اور روشنی پھیلایئں…

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے